ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

  • مئی
2020
حسن مدنی
دسمبر 2019ء میں چین کے شہر ووہان سے شروع ہونے والا کورونا وائرس Covid-19تاریخ انسانی کی مہلک اور وسیع ترین وبا کی حیثیت رکھتا ہے۔ 175 ممالک میں اڑھائی کروڑ سے زائدمتاثرین میں سے آٹھ لاکھ انسان اس وائرس کے ہاتھوں موت کے گھاٹ اُتر چکے ہیں جن میں ترقی اور صحت کے عالمی معیار کے بلند بانگ دعوے کرنیوالے ممالک سرفہرست ہیں۔ چند ایک کو چھوڑ کر ہر ملک میں کئی مہینوں پر محیط لاک ڈاؤن کیا جا چکا ہے
  • مئی
2020
ڈاکٹر فضل الہی
سیدنا ابوہریرہ﷜ نے سنّتِ نبویﷺ سننے، سمجھنے، یاد کرنے اور اُسے اُمت تک کمی و بیشی کے بغیر پہنچانے میں توفیقِ الٰہی سے منفرد مقام پایا۔ حافظ ذہبی لکھتے ہیں:
"حَمَلَ عَنِ النَّبِيِّ ﷺ عِلْمًا کَثِیْرًا طَیِّبًا مُّبَارَکًا فِیْهِ، لَمْ یُلْحَقْ فِيْ کَثْرَتِهِ." [1]
’’اُنہوں نے نبی کریمﷺ سے بہت زیادہ، نہایت پاکیزہ، بابرکت علم حاصل کیا۔ اس (علم) کی فراوانی میں کوئی اُن تک پہنچ نہیں سکا۔‘‘
  • مئی
2020
ابو یحیی نور پوری
22 ؍ جولائی 2020ء کو پنجاب اسمبلی سے متفقہ طور پر 'تحفظ ِبنیاد اسلام بل2020ء' منظور ہوا تو شیعیت کے ایوانوں میں بھونچال آگیا۔لاہور پریس کلب میں ایک وسیع پریس کانفر نس میں شیعہ علما نے اپنا مشترکہ موقف بیان کیا جس کا خلاصہ یہ ہے کہ ''اہل سنت 'صحابی'کی جو تعریف کرتے ہیں ، ہم اسے تسلیم نہیں کرتے۔ سیدنا معاویہ کے نام کے ساتھ 'رضی اللّٰہ عنہ' نہیں لکھیں گے۔ہم سیدنا ابوبکر ؓ ، عمر فاروق ؓ اور عثمان غنی کو 'خلیفہ راشد' نہیں مانتے۔ہم رسول اللّٰہ ﷺ کی چار بیٹیاں(سیدہ زینب ؓ ،سیدہ رقیہ ؓ ،سیدہ ام کلثوم ؓ اور سیدہ فاطمہ الزہرا ؓ ) نہیں مانتے،
  • مئی
2020
حسن مدنی
قادیانیوں کی شمولیت کے خلاف ہر محبِ رسول ﷺ کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے!
تحریک انصاف کی حکومت کی وفاقی کابینہ نے بدھ، 29؍ اپریل2020ء کو 'قومی اقلیتی کمیشن' میں قادیانیوں کو شامل کرکے اس کمیشن کو مؤثر کرنے کی جو اُصولی منظوری دی ہے، اس کے قومی اور دینی نقصانات، متوقع فوائد سے کہیں زیادہ ہیں۔ اس لئے عالمی دباؤ سے ہونے والے اس حکومتی فیصلہ کو واپس کرنے کے لئے بھر پور اور فوری جدوجہد کرنا ضروری ہے۔ یہ منظوری مسلمانوں کے نظریات اور ملی تشخص پر حملہ ہے!!
  • مئی
2020
حسن مدنی
ہرسال 8 ؍ مارچ کو یوم خواتین پر حقوقِ نسواں کے بلند بانگ نعرے لگائے جاتے ہیں اور اب تو کچھ عرصہ سے باقاعدہ منصوبہ بندی سے کالج ویونیورسٹی کے طلبہ وطالبات کو اس مہم کے لئے تیار کیا جاتا اور مغربیت زدہ نعرے ان کے ہاتھوں میں تھما کر، عورت مارچ کے ذریعے معاشرے میں اپنا مذموم ایجنڈا پھیلایا جاتا ہے۔ اس سال 4 ؍ مارچ 2020ء کو ڈرامہ نگار خلیل الرحمٰن جاوید اور اباحیت وانارکیت کی پرچارک ماروی سرمد کے درمیان اس موضوع پر تلخ مباحثے نے سنگین صورتحال پیدا کردی جس کے بعد قومی سطح پر ایک مکالمہ شروع ہوگیا۔
  • مئی
2020
عبدالقوی لقمان
چند باتیں؍ چند یادیں ... ماضی کے دریچے سے!
اس عالمِ فانی میں یقیناً کچھ ایسی ہستیاں جنم لیتی ہیں جن کی زندگی دوسروں کے لیے مشعلِ راہ ہوتی ہے۔ جب وہ عالم جادوانی کی جانب کوچ کر جاتے ہیں، تو اپنے پیچھے ایسے بہت انمٹ سنہرے نقوش چھوڑ جاتے ہیں کہ ان کا سفرِ آخرت بھی اللّٰہ جل شانہ کی مخلوق کے لیے قابل رشک بن جاتا ہے اور جن کی باعمل اور پاکیزہ زندگی کے باوصف اپنی کم مائیگی کا احساس مزید بڑھ جاتا ہے اور بے ساختہ زبان پر یہ الفاظ آ جاتے ہیں:
  • مئی
2020
پروفیسر ملک محمد حسین
جناب شفقت محمود کی سربراہی میں وفاقی وزارتِ تعلیم کا شعبہ 'اکادمی برائے تعلیمی منصوبہ بندی وانتظام' AEPAM، دینی مدارس کے ساتھ 'یکساں قومی نصاب تعلیم' کے لئے بھی مصروفِ کار ہے۔ پاکستان کے 5 تا 16 سالہ شہریوں کی بنیادی تعلیم دستور کے آرٹیکل نمبر 25؍الف کی رو سے حکومتی فریضہ ہے۔جبکہ معاشرے میں انفرادی واجتماعی لحاظ سے اسلامی تعلیمات کے فروغ کی ضمانت دستور کا آرٹیکل نمبر 31 دیتا ہے۔ اسی طرح دستور کا آرٹیکل نمبر 251 اُردو کو بطور قومی زبان نافذ کرنے کی تلقین کرتا ہے جس پر سپریم کورٹ کا 8؍ستمبر2015ء کا مؤثر فیصلہ بھی موجود ہے۔