زیرِ نظر مقالہ میں نزولِ قرآن مجید کی ترتیب بیان کی گئی ہے اور اس کے ساتھ ہی ساتھ قرآنِ مجید کی بعض سورتوں کے تعارف اور ان کے نزول کے پسِ منظر پر روشنی ڈالی گئی ہے۔مقالہ کے شروع میں دورِ جاہلیت کے لوگوں کے اخلاق و عقائد کا بیان ہے تاکہ قرآنِ مجید کے بتدریج نزول کی حکمت سمجھ میں آسکے اور آخر میں قرآن مجید کی تمام سورتوں کی ترتیبِ نزول، جدول کی صورت میں پیش کی گئی ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ یہ
عبدالرشید عراقی
1981
  • نومبر
''میں نے خواب میں دیکھا کہ میرے گھر میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے اعضاے شریفہ میں سے ایک عضو ہے۔ میں اس سے پریشان ہوئی اور رسول اللہ کے پاس حاضر ہوئی اور آپ سے اس واقعہ کا تذکرہ کیا تو آپ ؐنے فرمایا: اچھی بات ہے، فاطمہ ایک لڑکا جنے گی تو تم اپنے بیٹے قثم کے دودھ کے ذریعے اس کی کفالت کرو گی۔ وہ کہتی ہیں کہ فاطمہ نے حسن کو جنم دیا اور اسے میرے سپرد کر دیا۔
زاہدہ شبنم
2009
  • اپریل
ماہنامہ'اشراق'جاوید احمد گامدی کی زیر نگرانی،اور معز امجد کی ادارات میں شائع ہونے والا مجلّہ ہے جو فکر فراہیؔ اور اصلاحی کے علمبردار وامین ہونے کا دعویدار ہے۔مذکورہ مجلّہ کی اشاعت بابت ماہ ستمبر1998ءمیں محترم طالب محسن نے کیا﴿ اقْرَأْ بِاسْمِ رَبِّكَ ... ١﴾...العلق پہلی وحی الہٰی ہے؟(نقد ونظر)"کے عنوان سے چار صفحات کا مضمون سپردِ قرطاس کیا ہے۔اگرچہ مذکورہ مضمون کا محرک اور پس منظر علی گڑھ(انڈیا)سے شائع ہونے والے سہ ماہی جریدے،تحقیقاتِ اسلامی،میں جناب سید جلال الدین عمری کے مضمون"مکی دور میں رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی دعوتی حکمت عملی"کی پہلی قسط کو قرار دیا گیا ہے تاہم فاضل مضمون نگار نے جہاں مضمون کی اہمیت وافادیت کو تسلیم کیا،وہاں انہوں نے سید جلال الدین عمری کے اس نقطہ نطر سے واضھ اختلاف کیا ہے جس مین انہوں نے﴿ اقْرَأْ بِاسْمِ رَبِّكَ ... ١﴾...العلق کو پہلی وحی قرار دیا ہے۔چنانچہ مضمون نگار رقم طراز ہیں:
عبداللہ صالح
1998
  • نومبر