ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

آن لائن مطالعہ
  • فروری
2004
عطاء اللہ صدیقی
ثقافت اور کلچر کی تعریف میں کہا گیا ہے کہ وہ زندگی کی روحانی، فکری، مذہبی اور اخلاقی قدروں کی مجسم تصویر کا نام ہے۔ سچائی، حسن، خیرمحض، انصاف اور محبت اِسی کلچر کی کرنیں ہیں ۔ ثقافت نام ہے ایک طرزِفکر، تخلیقی روایت اور طرزِ معاشرت کا ، جس میں زندگی کا سب سے قیمتی سرمایہ راست بازی، نگاہ کی بلندی اورکردار کی پاکیزگی قرار پاتی ہے۔
  • فروری
2004
حسن مدنی
ایسی کیفیت کبھی طاری نہیں ہوئی؛ دل کے عین وسط میں ایک انگارہ سا مسلسل دہک رہا ہے۔ دماغ میں دوڑتی باریک رگوں میں جیسے کوئی مسلسل سوئیاں سی چبھو رہا ہے، اعصاب شکستگی سے نڈھال اور خستگی سے چو ُر ہیں ۔ سوچ کی مرجھائی شاخ پر کسی خیال کی کوئی کونپل نہیں پھوٹ رہی۔ قلم پر اُنگلیوں کی گرفت ڈھیلی پڑ گئی ہے اور لفظ روٹھ جانے والے دوستوں کی طرح میری فکر سے گریزاں ہیں۔
  • فروری
2004
محمد رمضان سلفی
لفظ ِ 'عيد' عود سے مشتق ہے، جس كا معنى لوٹنا اور بار بار پلٹ كر آنا ہے- اس كا نام عيد اس لئے ہے كہ يہ ہر سال لوٹ كر آتى ہے اور كسى بهى چيز كے پلٹ كر آنے ميں كوئى نہ كوئى حكمت پنہاں ہوتى ہے اور عيد كے ہر سال لوٹ كر آنے ميں بهى دنيا بهر كے مسلمانوں كو يہ سبق ياد دلانا مقصود ہوتا ہے كہ وہ جاہلیت كے اَطوار و عادات اور اہل جاہلیت كى تہذيب و ثقافت كو چهوڑ كر اپنے اصل اسلام كى طرف لوٹ آئيں، كيونكہ اسى سے ان كى كهوئى ہوئى عزت بحال ہوسكتى ہے۔
  • فروری
2004
ابو الکلام آزاد
دنيا كے تمام مذاہب ميں اسلام كى ايك مابہ الامتياز خصوصیت يہ ہے كہ اس نے تمام عبادات و اَعمال كا ايك مقصد متعین كيااور اس مقصد كو نہايت صراحت كے ساتھ ظاہر كرديا- نماز كے متعلق تصريح كى: ﴿إنَّ الصَّلٰوةَ تَنْهٰى عَنِ الْفَحْشَاءِ وَالْمُنْكَرِ﴾ (العنكبوت:٤٥)
"نماز ہر قسم كى بداخلاقيوں سے انسان كو روكتى ہے-"
  • فروری
2004
عمران ایوب لاہوری
شریعت كے وہ چند مسائل جو ہمارى توجہ كسى نہ كسى تاريخى واقعہ كى طرف مبذول كرتے ہيں ان ميں سے ايك قربانى بهى ہے- ايسے مسائل سے مقصود محض انہيں مقررہ وقت پر كر لينا ہى كافى نہيں ہے بلكہ ان تاريخى واقعات پر گہرى نگاہ ڈالتے ہوئے اس جذبہ عبادت اور قربانى كى ناقابل فراموش كنہ وحقيقت كو سمجھ كر اپنانے كى كوشش كرنابهى ضرورى ہے جس كے باعث يہ مسائل ہمارى اسلامى روايات ميں جزوِلاينفك كى حيثيت اختيار كر گئے۔
  • فروری
2004
خالدہ امجد
نام :  حضرت عائشہ بنت عبداللہ ابوبكر صديق  لقب:صديقہ
كنيت:  اُمّ عبداللہ قبيلہ:غنم بن مالك والدہ كا نام:ا ُمّ رومان
نسب:  والد كى طرف سے سات اور والدہ كى طرف سے گيارہويں پشت ميں حضرت محمد ﷺ كے سلسلہ سے جا ملتا ہے-

  • فروری
2004
محمد اسلم صدیق
تیسرے ہزاريہ میں اُمت مسلمہ كو درپيش چیلنجوں كى تعداد روز افزوں ہے- ان میں سے خطرناک چیلنج امريكہ كا 'نيو ورلڈ آرڈر' ہے- ا س نظام كے تقاضوں كو پورا كرنے كے لئے وہ اپنی تہذیب و ثقافت اور اپنی تمام معاشرتی بیماریوں كو جو مغربی معاشرہ كو گھن كى طرح چاٹ رہى ہیں ، تمام تہذیبوں میں داخل كرنا چاہتا ہے!!