اگر صبر وقناعت ہے                                                     توراحت ہی راحت ہے
تکبر کا مال اکثر                                                             لڑائی ہے عداوت ہے
ہزاروں رنج جلوت کا                                                مداوا کنج خلوت ہے
خدا کے سامنے جھک جا                                             اسی میں تیری  رفعت ہے
یہ تیرے دل کی بے چینی                                  گناہوں کی عقوبت ہے
ہمیشہ خندہ  رو رہنا                                            شرافت کی علامت ہے
مال عشرت دنیا                                               سرمحشر فضیحت ہے
دلوں کو فتح کرلینا                                         محبت کی کرامت ہے
نعیم خلد سے افضل                                     الٰہی تیری قربت ہے
مدینے میں جودیکھا ہے                           ابھی تک اس کی   حسرت ہے
اجل ہے گھات میں تیرے
تو عاجز محو غفلت ہے