ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

  • اپریل
1985
اکرام اللہ ساجد
صدر پاکستا ن ،جنرل محمد ضیاء الحق نے فرما یا ہے کہ:"نئے وزیر اعظم کے حلف اُٹھا نے اور سول حکومت کی بحالی کے بعد وہ بہت زیادہ مسرت اور (اپنے تیئں)ہلکا پھلکامحسوس کر رہے ہیں ۔۔۔وہ خدا تعالیٰ کے احسان مند ہیں کہ اس نے انہیں قوم سے کیا ہوا اپنا وعدہ پورا کرنے کی قوت اور حوصلہ بخشا!"(روزنامہ جنگ 26مارچ1985ء)۔۔۔ہم اس "ایفائے عہد" پر صدر صاحب کو مبارکباد"پیش کرنے  کے ساتھ ساتھ انہیں یہ بھی یا د دلانا چاہتے ہیں کہ ان کا بحالی جمہوریت کا یہ وعدہ پوری قوم سے نہیں بلکہ درحقیقت صرف سیاستدانوں سے تھا جو اُن کے دوران اقتداران کے واحد حریف ہیں اور جن میں سے اکثر آج بھی جیلوں میں یا اپنے اپنے گھروں میں نظر بند ہیں لہٰذاایہ فیصلہ کرنا کہ صدر صاحب نے بحالی جمہوریت کے تقاضے کس حد تک پورے کیے ہیں ۔ان نظر بند سیاستدانوں کا کا م ہے!۔۔۔البتہ جہا ں تک عوام کا تعلق ہے ،انہیں ان بحالی جمہوریت سے نہ کل کو ئی خاص د لچسپی تھی نہ آج کو ئی دلچسپی ہے ۔۔۔ہاں مگر چند لو گ ایسے ضرور ہیں کہ مغربی جمہوریت سے مرعوب ہو نے کے ساتھ ساتھ زبان وقلم تک بھی جن کو رسائی حاصل  ہے،وہ جمہوریت کا ڈنڈا لیے عوام کے سر پر سوار ہیں ۔اور یوں اس نعرہ جمہوریت کو خود ہی انہوں نے عوام کی نظروں میں مقبول تصور کر لیا ہے۔۔۔ چنانچہ یہ پرو پیگنڈہ بھی اسی سلسلہ کی کڑی ہے کہ:"عوام نے انتخابات میں بھر پو ر شرکت کر کے  جمہوریت اور انتخابی عمل سے اپنی گہری وابستگی کا ثبوت فراہم کردیا ہے۔"
  • اپریل
1985
ثنااللہ مدنی
شرک فی الصفات؟نبوت کسبی شی ہے یا وھبی؟
کفر کی قسمیں ؟وحی کا مفہوم ؟اسلام میں مرتد کی سزا؟
محترمہ روبینہ گل لکھتی ہیں ۔
"مجھے مندرجہ ذیل سوالات کے جواب درکار ہیں : 
1۔شرک فی الصفات کیا ہے۔؟
2۔کیا کوئی شخص اپنی کوشش سے نبی بن سکتا ہے۔یا یہ وہبی چیز ہے؟
3۔کفر کی کتنی قسمیں ہیں ؟
4۔وحی کا مفہوم کیا ہے اور کیا وحی کسی غیر نبی کی طرف بھی آسکتی ہے؟
5۔اسلام میں مرتد کی سزا کیا ہے؟
امید ہے آپ تمام سوالوں کے جوابات مفصل تحریر فرماکر شکریہ کا موقع دیں گے۔اگر اکابرین امت اور جدید محقیقن کی کتب کے بھی کچھ حوالے مل جا ئیں تو درج فرمادیں ۔نوازش ہوگی!
  • اپریل
1985
شبیر احمد نورانی
کتا ب و سنت کی روشنی میں          احکام عقیقہ:
8۔ہر مسلمان کو حتیٰ الوسع اپنی اولاد(مذکریا  مؤنث)کا  عقیقہ کرنا چایئے ۔کیونکہ حضرت سلمان بن عامر رضی اللہ عنہ )روایت کرتے ہیں :کہ" میں نے رسول اللہ ﷺ کو سنا ۔آپﷺ فرماتے تھے لڑکے کا عقیقہ ہے اس کی طرف سے خون بہاؤ اور اس سے تکلیف کو دور کر دو!"
9۔عقیقہ کرنا واجب یا فرض نہیں بلکہ سنت ہے کیو نکہ آپﷺ نے خود حضرت حسن  و حضرت حسین   کا عقیقہ  کی چنانچہ حضرت برید  ﷜ روایت کرتے ہیں :کہ"رسول اللہ ﷺ نے حضرات حسن وحسین  ﷢ کا عقیقہ کیا !"
اسی طرح آپﷺ نے دوسروں کو عقیقے کا حکم دیا ۔ چنانچہ حضرت عائشہ ؓ  سے روایت ہے "کہ"رسول اللہ ﷺ نے انہیں حکم دیا کہ لڑکے کی طرف سے دو ایک جیسی بکریاں اور لڑکی کی طرف سے ایک بکری ذبح کر کے عقیقہ کریں ۔اور دوسروں کو رغبت دلانے کے ساتھ آپ ﷺ نے ایسا کرنے یا نہ کرنے کا اختیار بھی دیا ۔لہٰذا عقیقہ کو فرض یا واجب کہنا دلا ئل کی روشنی میں ثابت نہیں ہو تا جیسا کہ مندرجہ احادیث سے ثابت ہے رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فر ما یا :
کہ" جس کے ہاں بچہ پیدا ہو پس وہ اپنے بچے کا عقیقہ کرنا چا ہے تو کرے۔"
  • اپریل
1985
عبدالرحمن کیلانی
مولانا عبد الرحمن کیلانی صاحب کے قرآن مجید سے انکار سماع سے متعلق دلائل اور ان کا تجزیہ
دلیل نمبر 1:
﴿والذين يدعون .......... ﴾ترجمہ ۔ ’’ اور جنہیں خدا کے سوا یہ لوگ پکارتے ہیں وہ کچھ پیدا نہیں کر سکتے ۔ بلکہ وہ خود پیدا شدہ ہیں وہ لاشیں ہیں بےجان ۔
کیالنی صاحب نے یہ نتیجہ اخذ کیا ہے کہ اموات غیر احیاء کا اطلاق نہ جنوں پر ہو سکتا ہے نہ فرشتوں پر ....... باقی صرف فوت شدہ بزرگ رہ جاتے ہیں جن پر اس آیت کا اطلاق ہو سکتا ہے ۔
کیلانی صاحب کا اخذ کردہ یہ نتیجہ چند وجوہ کی بنا پر باطل ہے ۔ فوت شدہ بزرگوں میں انبیاء کرام ، صدیقین ، شہداء ، صالحین بھی داخل ہیں ۔ انبیاء کرام کی حیات قرآن و حدیث سے ثابت ہے ۔ ارشاد باری تعالیٰ ہے :
﴿واسئل من ارسلنا من قبلك من رسلنا اجعلنا من دون الرحمن يعبدون ﴾(1) 
ترجمہ : وہ رسول و نبی جو ہم نے آپ سے پہلے مبعوث فرمائے ان سے پوچھ(9حوالہ) لیجئے کہ ہم نے ذات رحمن جل وعلی کے بغیر کئی معبود مقرر کیے ہیں جن کی عبادت کی جائے یقینا ایسا نہیں ۔
  • اپریل
1985
غازی عزیر
آیت اللہ خمینی  کے عقائد و افکار کی ایک ہلکی سی جھلک آپ نے ملاحظہ فرمائی ، اب اندرون و بیرون ملک ان کا کیا کردار ہے ، اس کی طرف بھی ذرا سی توجہ فرمائیں ۔ بقول ماہنامہ الفرقان لکھنؤ:
’’ ایران کے سرکاری مہمان خانہ بزرگ ( استقلال ہوٹل ) میں ٹھہرے ہوئے بیرونی مہمان اس قسم کے بیتر بالعموم دیکھتے ہیں جن پر لکھا ہوتاہے :
’’ سنتحد وسنت لاحم حتي نسترد من ايدي المقصبين اراضينا المقدسة القدس والكعبة والجولان ‘‘
’’ یعنی ہم متحد ہوں گے او رجنگ آزما ہوں گے یہاں تک کہ غاصبوں کے قبضے میں سے اپنی مقدس زمینیں یعنی بیت المقدس ، کعبہ اور گولان واپس لے لیں ۔ ‘‘ ( ماہنامہ الفرقان لکھنؤ مجریہ ماہ ستمبر 1983 )
روزنامہ ’’ جسارت‘‘ کراچی میں جماعت اسلامی پاکستان کے مشہور اہل قلم و رکن جناب خلیل حامدی صاحب کا ایک مکتوب شائع ہوا تھا جس کا اقتباس پیش خدمت ہے
  • اپریل
1985
اسرار احمد سہاروی
مجھ کو دیوانہ بنا کر خوب رسوا کیجیے               غنچہ و گل میں سما کر مجھ سے پردہ کیجیے
شومئی قسمت کا اپنی یوں مداوا کیجیے             حسن یکتا کو دلوں میں بھلوہ فرما کیحیے
خود ہی ہو جائیں گے وہ محو تماشائے جنوں    دل میں ذوق جستجو کا حسن پیدا کیجیے