ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

آن لائن مطالعہ
  • اپریل
2015
حسن مدنی
مشرقِ وسطیٰ کی صورتحال، اِمکانات اور پاکستان کا کردار

یمن میں جاری خانہ جنگی کا پس منظر طویل ہے ، خدانخواستہ یہ ایک عالمی جنگ کی طرف نہ بھی بڑھے تو مستقبل میں عالم اسلام میں اس کے اثرات بڑے دور رَس دکھائی دیتے ہیں۔ اصل صورتِ واقعہ کیا ہے اوراس کا درست حل کیا ہونا چاہیے، پاکستان کو اس میں کیا کردار ادا کرنا چاہیے، ذیل میں ان پہلوؤں پرہماری معروضات پیش خدمت ہیں :
  • اپریل
2015
محب اللہ قاسمی
﴿اِنَّ اللّٰهَ يَاْمُرُكُمْ اَنْ تُؤَدُّوا الْاَمٰنٰتِ اِلٰۤى اَهْلِهَا...﴾

دنیا میں تمام انسان صلاحیتوں کے لحاظ سے ایک جیسے نہیں ہیں۔کسی میں کوئی صلاحیت ہوتی ہے تو کسی میں کوئی اور،کسی میں کم توکسی میں زیادہ ۔ اسی وجہ سے دنیاکا ہرکام ہرانسان بخوبی انجام نہیں دے سکتا اورنہ وہ تنہا اجتماعی اہداف کے حصول میں کامیاب ہوسکتاہے۔
  • اپریل
2015
سلمان بن حمد بطحی
نبی کریمﷺ کی بار بار اہانت کی کوششیں جہاں اہل مغرب کے تعصّب کی نشاندہی کر رہی ہیں، وہاں مسلمانوں کے جذبات میں تلاطم پیدا کررہی ہیں۔ایسے حالات میں ہر اُمّتی اپنا کچھ نہ کچھ کردار ادا کرنا چاہتا ہے تاکہ وہ حمایتِ مصطفیٰﷺ کی سعادت اور آخرت میں ان کی شفاعت سے محروم نہ رہے۔اس سلسلے میں عربی کتابچے100وسیلة لنصرة المصطفٰی ﷺ (ناشر دار القاسم، الر یاض) کا ترجمہ ہدیۂ قارئین کیا جا رہا ہے۔
  • اپریل
2015
کامران طاہر
معروف سیرت نگار اور محقق پروفیسر ڈاکٹر یٰسین مظہرصدیقی ہر سال کی طرح امسال بھی پاکستان کےعلمی دورہ پر تشریف لائے اور آپ نے ایک ماہ کے دوران سرگودھا ، فیصل آباد ، لاہور اور کراچی میں سیرت النبی ﷺکے موضوع پر اہم خطبات دیے۔ آپ نے مولانا ابو الحسن علی ندوی اور مولانا محمد رابع حسنی ندوی جیسی شخصیات سےکسبِ فیض کیا اور تمام تعلیم دار العلوم ندوۃ العلماء ، جامعہ ملّیہ اور مسلم یونیورسٹی علی گڑھ سے حاصل کی ،
  • اپریل
2015
محمد نعمان فاروقی
'فتنہ 'کہنے کو تو ایک چھوٹا سا لفظ ہے مگر اپنے اثرات اور مفہوم کے اعتبار سے بہت گہرا ہے۔ فتنہ گھر بار اور اہل و عیال میں بھی ہو سکتا ہے،ملک اور روئے زمین پر بھی۔ اس لیے اس کے مفہوم کو جاننا، اس کی وسعت کو سمجھنا اور اس سے بچنے کی تدابیر کرنا اور فتنہ آ جانے کی صورت میں محتاط طرزِ عمل اپنانا انتہائی ضروری ہے۔

'فتنہ' لغت کے آئینے میں
  • اپریل
2015
فاطمہ جلیل فلاحی
رسم ورواج سماجی زندگی کی علامت ہواکرتے ہیں اور تہذیب کے اجتماعی پہلوؤں کی عکاسی کرتے ہیں۔ ہرقوم کی انفرادی واجتماعی زندگی میں ان رسوم ورواج کی بڑی اہمیت ہوتی ہے اور تہذیب وثقافت، اخلاق وعادات، مذہبی عقائد، ذہنی رجحانات اور طرز معاشرت پر ان کا گہرا اثر پڑتا ہے۔

''یہ رسوم درحقیقت مختلف اسباب کا نتیجہ ہوتے ہیں