ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

آن لائن مطالعہ
  • دسمبر
1981
اکرام اللہ ساجد
پاکستان کو معرضِ وجود میں آئے تینتیس سال سے زائد کا عرصہ گزر چکا ۔۔۔ اس دوران کئی حکومتیں تبدیل ہوئیں اور مختلف نظامہائے حکومت آزمائے گئے، لیکن نہ تو کسی حکومت کو استحکام نصیب ہو سکا اور نہ ہی یہاں کوئی طرزِ حکومت کامیاب ہو سکا، بلکہ نت نئے تجربوں نے خود ملک کی سلامتی ہی کو داؤ پر لگا دیا ۔۔۔ چنانچہ جو لوگ 14 اگست سئہ 1947ء کو نقشہ دُنیا پر ایک نئی اسلامی مملکت کے وجود سے آشنا ہوئے تھے،
  • دسمبر
1981
عبدالرحمن عاجز
پسِ پردہ بھی وہ رگِ جاں بھی ہوں گے
ہم انہیں ڈھونڈ ہی لینگے وہ جہاں بھی ہونگے
بالیقین راہ محبت ہے رہ کرب و بلا
دیکھ اس پر مرے قدموں کے نشاں بھی ہوں گے
  • دسمبر
1981
عبدالرشید عراقی
مکی سورتوں کا دورِ آخر 12 نبوی تا 13 نبوی

نمبر شمار سورت سنِ نزول تقریبا خلاصہ اور مرکزی موضوع

ا یس 12 تا 13 نبوی قسم کھا کر آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کی رسالت کی تصدیق، قرآنِ پاک کے نزول کی غرض و غایت، کفار کو ظلم و ستم سے ڈرانا، اس بارے میں کفار کو بار بار ڈرایا گیا، توحید الہی، انسانی کمالات کا ذکر اور بعض انبیاء علیھم السلام کے حالات، دعوت کو زور دار طور پر پیش کیا گیا ہے۔
  • دسمبر
1981
محمد صادق خلیل
اسلام ہر دور مین راہنمائی کا فریضہ سر انجام دے سکتا ہے

قانون کی ضرورت

اس حقیقت سے انکار نا ممکن ہے کہ اجتماعی زندگی میں بعض ایسے حوادث رونما ہوتے ہیں جن سے معاشرے کا امن و سکون غارت ہو جاتا ہے حتی کہ باہمی جنگ و جدال تک کی نوبت آ جاتی ہے۔
  • دسمبر
1981
اسرار احمد سہاروی
ہشیار ہو غافل کہ بجا ہے طبلِ جنگ
نغمے کی صدا تیز ہو لے ہو بلند آہنگ
جھنکار سلاسل کی صدا دیتی ہے ہر دم
  • دسمبر
1981
طالب ہاشمی
رحمتِ عالم صلی اللہ علیہ وسلم نے مکہ سے ہجرت فرما کر مدینہ منورہ میں نزولِ اجلال فرمایا، تو انصارِ مدینہ نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے سامنے اپنے دیدہ و دل فرش راہ کر دیے لیکن حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے ان میں اپنے ایک انصاری جاں نثار کو نہ پایا جو بیعت عقبہ کبیرہ میں والہانہ جوش و خروش کے ساتھ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی بیعت کر چکے تھے اور بآوازِ بلند خدا کی قسم کھا کر یہ عہد کر چکے تھے کہ حضور مدینہ تشریف لائیں تو ہم اپنی جان اور آل اولاد کے ساتھ آپ کی حفاظت کریں گے۔
  • دسمبر
1981
سعید مجتبیٰ سعیدی
حرمِ مدینۃ

حرم: (بفتح الحاء الراء المهملتين) جو چیز قابلِ تکریم ہو وہ حرم کہلاتی ہے۔

اصطلاحا: وہ مقررہ حدود جن کے اندر شکار کرنا، درخت اور گھاس کاٹنا وغیرہ امور، شرعی طور پر ناجائز ہیں۔ مسلمانوں کے نزدیک دو حرم ہیں مکۃ المکرمہ اور مدینہ منورہ۔
  • دسمبر
1981
عبدالرحمن عاجز
زندگانی شاہراہِ موت پر ہے گامزن
اور ہم محوِ جمالِ غنچہ و سرد دسمن
ہر طرح کی نعمتیں دنیا میں تھیں حاصل جنہیں
  • دسمبر
1981
اکرام اللہ ساجد
نام کتاب ۔۔۔ عالمِ برزخ

مولف۔۔۔ مولانا عبدالرحمن عاجز

ناشر۔۔۔رحمانیہ دارالکتب امین پور بازار فیصل آباد