ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

آن لائن مطالعہ
  • جنوری
1987
رمضان سلفی
''طلوع اسلام'' جون 1986ء کے شمارے میں ایک مضمون بعنوان ''خطبہ حجة الوداع اور مقام حدیث ''شائع ہوا ہے۔ جس میں حجة الوداع کے خطبہ کو زیر بحث لاکر یہ تاثر دینے کی مذموم اور ناکام کوشش کی گئی ہے کہ ذخیرہ حدیث پورے کا پورا غیر معتبر ہے۔کیونکہ ...... طلوع اسلام لکھتا ہے:''احادیث میں لٹریچر میں سب سے مستند حدیث حجة الوداع کا خطبہ ہے۔جو رسول اللہ ﷺ نے ایک لاکھ سے زائد صحابہ کرام کے سامنے
  • جنوری
1987
فضل روپڑی
ہزاروں غم ہیں جان ناتواں ہے
میرے سینے سے اٹھتا اک دھواں ہے
 
نہ جادہ ہے نہ میر کارواں ہے
خدا جانے میری منزل کہاں ہے
  • جنوری
1987
سعید مجتبیٰ سعیدی
نمبرشمار

صفحہ

سطر

خطأ                                                             (غلط)

صواب                                              (صحیح)

103

291

2

سلیمان الاشعث

سلیمان بن الاشعث

104

294

3

عن جدہ عن ابن عباس

عن جدہ ابن عباس



  • جنوری
1987
غازی عزیر
اس مضمون کی روایات حضرات علیؓ، ابن عباسؓ او رجابرؓ سے مختلف الفاظ کے ساتھ مروی ہیں، جسےشیعہ حضرات خلیفة الرابع حضرت علی ابن ابی طالبؓ کے فضائل و مناقب میں بہت شدومد کے ساتھ پیش کرتے ہیں۔ذیل میں اس مضمون کی تمام روایات اور ان کےتمام طرق کا علمی جائزہ پیش کیاجاتا ہے، تاکہ مذکورہ حدیث کا مقام و مرتبہ واضح ہوجائے۔ واللہ المستعان!
  • جنوری
1987
زاہد احمد
مبلّغ کے اوصاف
مبلّغ میں مندرجہ ذیل خصوصیات کا پایا جانا ضروری ہے:
1¬۔ عمل:مبلّغ کے لیے سب سےمقدم بات یہ ہے کہ جس چیز کی وہ دوسروں کو دعوت دے رہا ہے اس پر خود بھی عمل کرتا ہو، ورنہ اس کی
  • جنوری
1987
فضل روپڑی
مسلم خفتہ جاگ اب زندہ دلی سے کام لے
باہمی کشمکش کو چھوڑ اور خدا کا نام لے

نام کوبھی نہیں کہیں الفت و ربط باہمی
ذاتی عداوتوں میں ہی کٹتی ہے تیری زندگی
  • جنوری
1987
محمد صدیق
'' درج ذیل مقالہ حضر ت مولانا ابوالسلام محمد صدیق جامعہ علمیہ سرگودھا نے ، جمعیت اہلحدیث کورٹ روڈ کراچی کے زیراہتمامایک مجلس مذاکرہ (منعقدہ 17نومبرتا 20نومبر 1968ء) میں پڑھا، جسے افادہ عام کے لیے محدث میں شائع کیا جارہا ہے۔ (ادارہ) الحمدللہ وکفیٰ وسلام علیٰ عبادہ الذین اصطفیٰ اما بعد !''يَسْـَٔلُونَكَ عَنِ ٱلْأَهِلَّةِ ۖ قُلْ هِىَ مَوَ‌ٰقِيتُ لِلنَّاسِ وَٱلْحَجِّ...﴿١٨٩﴾...سورۃ البقرۃ''
  • جنوری
1987
عبدالرحمن مدنی
اس بل کو منظوری کے نفاد شریعت ایک مجریہ 1986ء کہا جائے گا۔○............ یہ سارے پاکستان پر فی الفور لاگو ہوگا۔شریعت بل کی تعریف: شریعت سے مراد اسلام کے وہ تمام اصول ہیں جیسا کہ قرآن وسنت میں درج ہیں۔شریعت کی بالادستی: کسی عدالت کے سامنے کسی معاملے کی سماعت کے دوران کوئی بھی فریق یہ سوال اٹھا سکتا ہے کہ قانون یا قانون کی کوئی شق، جس کا سماعت سے تعلق ہے، شریعت کے منافی ہے اس
  • جنوری
1987
حافظ بدر الدین
وطن عزیز میں اس وقت نفاذ شریعت کا مطالبہ زوروں پر ہے او راس سلسلہ میں متفقہ ترمیمی شریعت بل کی منظوری کے لیے جملہ دینی مکاتب فکر کا ''متحدہ شریعت محاذ'' بھی تشکیل پاچکا ہے۔جس نے تھوڑے ہی عرصہ میں اسلامیان پاکستان کو اس اہم مسئلہ پر کافی حد تک منظم کردیا ہے کہ ملک میں لسانی، گروہی اور سیاسی اختلافات کی بناء پر داخلی امن و امان کا مسئلہ ہو یا خارجی محاذ پر ملک دشمنوں کی جارحیت کا خطرہ، ان تمام مسائل