ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

آن لائن مطالعہ
  • مارچ
  • اپریل
1975
ادارہ
دینِ اسلام جزوقتی حاضری کا نام نہیں نہ نیم عملی لائحۂ عمل کا یہ کوئی چارٹر ہے بلکہ یہ ایک ہمہ وقتی ذہنی کیفیت اور یک رنگ عملی اسلوبِ حیات کا نام ہے۔

﴿وَقالَ إِنّى ذاهِبٌ إِلىٰ رَ‌بّى سَيَهدينِ ٩٩﴾... سورة الصافات

کا سماں مومن پر ہر آن اور ہر مکان میں طاری رہتا ہے۔ قرآن نے اس کیفیت کو یوں بیان فرمایا ہے۔
  • مارچ
  • اپریل
1975
عبدالرحمن عاجز
حضرت شاہ فیصل رحمۃ اللہ علیہ شہید ہو گئے

...........اِنَّا لِلہِ وَاِنَّا اِلَیْهِ رَاجِعُوْنَ

۲۵؍ مارچ پاسبانِ حرم اور سعودی عرب کے فرمانروا شاہ فیصل بن عبد العزیز ایک قاتلانہ حملہ میں شہید ہو گئے۔ انا للہ وانا الیہ راجعون!
  • مارچ
  • اپریل
1975
عبدالرحمن عاجز
جل رہا ہے آتشِ حسرت میں ہر پروانہ آج       بجھ گئی اِک اور شمعِ محفلِ جانا نہ آج
پھول افسردہ، کلی یژمردہ، غنچے سرنگوں          گلستانِ دہر بن کر رہ گیا ویرانہ آج
خون ہو کر بہہ گیا دل دیدۂ بے تاب سے        ہو گیا خالی چھلک کر صبر کا پیمانہ آج
  • مارچ
  • اپریل
1975
عزیز زبیدی
قَالُوْا اَتَجْعَلُ فِيْھَا مَنْ يُّفْسِدُ فِيْھَا وَيَسْفِكُ الدِّمَآءَ ج وَنَحْنُ نُسَبِّحُ بِحَمْدِكَ وَنُقَدِّسُ لَكَ

(تو فرشتے) بولے کیا آپ زمین میں ایسے شخص کو (خلیفہ) بناتے ہیں جو اس میں فساد پھیلائے اور خونریزیاں کرے اور (بناتے ہیں تو ہم کو بنائیں کہ) ہم تیری حمد و (ثناء) کے ساتھ تیری تسبیح و تقدیس کرتے رہتے ہیں۔
  • مارچ
  • اپریل
1975
عزیز زبیدی
کسی خاص مقام پر دفن کی وصیت کا حکم اور اس کا فائدہ؟ مسئلہ کفاءت وغیرہ

الاستفتاء۔ یہ استفتاء لمبا چوڑا آیا ہے، اس کا خلاصہ یہ ہے کہ:

1. وابتغوا الیه الوسيلة ميں ''الوسيلة'' سے کیا مراد ہے؟
  • مارچ
  • اپریل
1975
ادارہ
پاکستان بن گیا، بن کر پھر ٹوٹ گیا اور ٹوٹ کر کچھ حصہ پھر غلام بن گیا۔ مگر دونوں جگہ 'نعرہ آزادی' کے اس ڈھونگ سے متاثر ہو کر عوام کالانعام بھی یہی سمجھ بیٹھے ہیں کہ واقعی ہم آزاد ہو گئے ہیں۔ ہو سکتا ہے کہ دنیا میں 'آزادی اور حریت' کا مفہوم اور مضمون یہی ہو، جس کی نشان دہی وہ لوگ کر رہے ہیں لیکن 'بندۂ مسلم' کے ہاں حریت اور آزادی کا یہ مفہوم، حریت پر ایک الزام، تہمت اور افتراء ہے جس کو سیاسی شعبدہ بازوں نے گھڑ کر لوگوں کو اپنی غلامی میں پختہ اور مخلص بنانے کے لئے ایک بھونڈی سازش کے طور پر اختیار کیا ہے۔
  • مارچ
  • اپریل
1975
اختر راہی
مظہر جان جاناں کے ایک مرید

مظہر جانجاناں کے حلقۂ ارادت میں دو شخصیات ایسی تھیں جو علم و فضل کے اعتبار سے اپنے دور میں یگانہ تھیں۔ ایک تو ''تفسیر مظہری'' کے مؤلّف مولانا قاضی ثناء اللہ پانی پتی (م ) تھے اور دوسرے عظیم منطقی مولوی غلام یحیٰ بہاری۔
  • مارچ
  • اپریل
1975
ادارہ
نام : انسانی دنیا پر مسلمانوں کے عروج و زوال کا اثر

مصنف : مولانا سید ابو الحسن علی ندوی

ضخامت : ۴۸۰ صفحات (مجلد۔ دیدہ زیب گرد پوش)