ڈاونلوڈ

آن لائن مطالعہ

آن لائن مطالعہ
  • اپریل
1986
عبدالغفار حسن
حد ِ رجم کے بارے میں ایک مسلک تو یہ ہے کہ شادی شدہ زانی کے لیے رجم ہے او رغیر شادی شدہ کے لیے سو کوڑے ہیں۔ اس مسلک کی طرف اشارات قرآن مجید میں ملتے ہین، جن کی تفصیل ایک الگ مستقل مضمون میں بیان کی جائے گی۔ ان شاء اللہ اور احادیث میں صراحت کے ساتھ حدِ رجم کا بیان موجود ہے۔ تقریباً چالیس صحابہؓ سے رجم کی روایات ملتی ہیں۔ پھر ہر دور میں ان روایات کو نقل کرنے والے کثیر تعداد میں پائے
  • اپریل
1986
عصمت اللہ
عالم دین مبیں شیخ الحدیث
عالم دین متیں شیخ الحدیث

وہ محمد قلب مصباح الہدیٰ
پاک طنیت، پاک ہیں شیخ الحدیث
  • اپریل
1986
عبدالسلام بھٹوی
چوری ایک ایسا جرم ہے جس کی مذمت پر تمام اقوام عالم متفق ہیں۔کیونکہ اس سے انسان کا مال ، جو اللہ تعالیٰ نے اس کی زندگی کے قیام کا باعث بنایا ہے، غیر محفوظ ہوجاتا ہے۔ بلکہ بعض اوقات مزاحمت کی صورت میں جان بھی چلی جاتی ہے۔ اسے روکنے کے لیے لوگوں نے اپنی عقل سے کئی قانون بنائے جو دنیا کے مختلف ملکوں میں رائج ہیں مگر اس کی روک تھام نہ کرسکے۔ بلکہ انسانوں کی تجویز کردہ سزاویں اس جرم کوختم کرنےکی
  • اپریل
1986
غازی عزیر
عقیقہ صرف بکری، مینڈھا اور دنبہ سے ہی کیا جانا چاہیے جیساکہ اوپر ذکر کیا گیا ہے۔بھینس ، گائے اور اونٹ ذبح کیے جانے کے متعلق کووی صحیح او رقابل اعتماد حدیث موجود نہیں ہے۔لہٰذا اس مسئلہ میں اکثر علمائے سلف و خلف، ائمہ حدیث اور مجتہدین کا عمل اور فتویٰ یہی ہے کہ بھیڑ،یا بکری یا دُنبہ کے علاوہ کسی دوسرے جانور سے عقیقہ کرنا سنت مطہرہ سے ثابت اور صحیح نہیں ہے۔عقیقہ میں اونٹ ذبح کرنے کے متعلق حضرت
  • اپریل
1986
سعید مجتبیٰ سعیدی
ماسٹر بشیر احمد صاحب علی پور چٹھہ ضلع گوجرانوالہ سے لکھتے ہیں:جناب مولانا صاحب، السلام علیکم ورحمة اللہ و برکاتہ'!سوال : کیا نماز مغرب سے پہلے دو رکعتیں پڑھنا مسنون ہے؟ جواب مدلّل، بالتفصیل تحریر فرمائیں، جزاکم اللہ الجواب :عصر حاضر میں امت مسلمہ کا بہت بڑا المیہ یہ ہے کہ مسلمانوں کی اکثریت دین اسلام سے بہ بہرہ او رلاتعلق ہے اور جوں جوں وقت گزرتا جارہا ہے ، اس میں اضافہ ہی اضافہ ہوتا چلا جارہا ہے۔
  • اپریل
1986
اکرام اللہ ساجد
16۔اکتوبر 1985ء کو یہ قرار داد قومی اسمبلی نے اپنے اجلاس میں حکومتی پارٹی اور آزاد گروپ کے درمیان ہونے والے معاہدے کے تحت متفقہ طور پر منظور کی۔(1)  قومی اسمبلی متفقہ طور پر یہ قرار داد منظور کرتی ہے کہ اس کے آئندہ اجلاس میں ایک نئے دستوری ترمیمی بل کے ذریعے درج ذیل دستوری ترامیم کی جائیں۔(الف) : آرٹیکل نمبر 2 میں ''اسلام پاکستان کا سرکاری مذہب ہے'' کے بعد اضافہ کیا جائے کہ ''قرآن و سنت
  • اپریل
1986
فضل روپڑی
ایک ہنگامہ ہے حرب و ضرب اضداد کا
سامنا اسلام کو ہے کفر او رالحاد کا

نام مٹ جائے جہاں سے نالہ و فریاد کا
یانکل جائے جنازہ قہر و استبداد کا
  • اپریل
1986
اکرام اللہ ساجد
گزشتہ شمارہ (محدث مراچ 1986ء) میں ہم نے لکھا تھا کہ ''اسلامی مملکت کا دستور کتاب اللہ ہی ہوتا ہے، جس کی کامل اور متعین تعبیر سنت رسول اللہ ﷺ ہے او راسی کا نام شریعت ہے'' اسلامی دستور کے بارے میں یہی مؤقف ہم محدث کے ادارتی کالموں اور دیگر مضامین میں بھی ، موقع بہ موقع پیش کرتے چلے آئے ہیں۔ لہٰذا اس کی تفصیلات میں تو ہم نہیں جائیں گے، لیکن چونکہ اپنے وعدہ کے مطابق (جو گزشتہ شمارہ میں ہم