• جنوری
1998
محمد افضل ربانی
جمعہ دراصل ایک اسلامی اصطلاح ہے۔ زمانہ جاہلیت میں اہل عرب اسے "یوم عروبہ" کہا کرتے تھے۔ اسلام میں جب اس کو مسلمانوں کے اجتماع کا دن قرار دیا گیا تو اس کا نام جمعہ رکھا گیا (1)
"جمعہ کا لفظ "جمع" سے مشتق ہے۔ وجہ اشتقاق یہ ہے کہ اس دن مسلمان بڑی بڑی مساجد میں اللہ کی عبادت کے لئے جمع ہوتے ہیں۔ (2)
"حضرت انس رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے یہ فرمایا کہ "جمعہ کی رات روشن رات ہے اور جمعہ کا دن چمکتا دن" (3) ۔ اسی طرح حضرت ابوھرہرہ رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:
"ان دنوں میں سے جن میں آفتاب طلوع ہوتا ہے۔ جمعہ کا دن بہترین دن ہے۔ اسی روز حضرت آدم علیہ السلام کو پیدا کیا گیا اور اسی دن انہیں جنت میں داخل کیا گیا اور اسی روزہ وہ جنت سے نکالے گئے اور قیامت بھی جمعہ کے روز ہی قائم ہو گی" (4)
  • اکتوبر
1992
محمد افضل ربانی
اسلام نے روز اولین سے اسلام کی برتری اور ضرورت کا اعلان کیا،کیونکہ علم کے بغیر نہ دین کا کوئی معاملہ سنور سکتا ہے۔نہ دنیاکا اسلام سے پہلے حصول علم کا حق ایک مخصوص طبقے تک محدود ہوتا تھا۔عام آدمی اس نعمت سے محروم تھا۔اسلام ہی پہلا مذہب ہے جس نے یہ اعلان کیا کہ حصول علم ہر انسان کا مسلم حق ہے خواہ امیر ہو یا غریب،عربی ہو یاعجمی ،ارشاد ہے:۔
  • فروری
  • مارچ
1995
محمد افضل ربانی
مصطفی المنفلوطی 7جمادی الاولی 1293ھ بمطابق جون 1876ء کو منفلوط (11) میں پیدا ہوئے (2)احمد عبید نے آپ کی تاریخ پیدا ئش 1877ء بتا ئی ہے (3)جبکہ عمر فروخ کے نزدیک آپ 1875ء کو پیدا ہوئے۔(4)
منفلوطی کی والدہ ترک تھیں جبکہ آپ کے والد کا سلسلہ نسب حضرت حسین بن علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ  سے جا ملتا ہے ۔اس طرح آپ نیم ترک نیم عرب تھے (5)
آپ کا خاندان زہد و تقوی اور علم و عرفان کے باعث نہا یت معزز سمجھا جا تا تھا دوسال سے منفلوط کی سرداری آپ ہی کے خاندان میں چلی آرہی تھی آپ کے چچا ابرا ہیم لطفی منفلوط میں چیف جج کے عہد ہ پر فا ئز رہےجبکہ آپ کے والد محمد محمد لطفی منفلوط میں جج تھے(6)
منفلوطی نے قرآن مجید اور ابتدا ئی تعلیم مدرسہ جلال الدین السیوطی میں حاصل کی یہ مدرسہ اسیوط (7)میں واقع تھا 11سال کی عمر میں آپ نے قرآن مجید یاد کر لیا ۔جب آپ کی عمر 13 سال ہو ئی تو آُ الازھر الشریف چلے گئے ۔اور دس سال تک عالم اسلام کی اس ممتاز درسگاہ میں مختلف جید علماء سے اکتساب فیض کرتے رہے ۔اسی دوران آپ کو مفتی محمد عبدہ(8)کےحلقہ درس میں شمولیت کے مواقع ملے،اس طرح آپ مفتی صاحب سے خوب مستفید ہو ئے۔(9)
منفلوطی کے والد محمد محمد لطفی کی تین بیویاں تھیں پہلی بیوی سے مصطفیٰ (1) اور حسن پیدا ہو ئے ۔آپ کے والد نے اپنی پہلی بیوی(11) کو طلا ق دے دی اور فاطمہ عثمان نامی ایک خاتون سے شادی کر لی ۔آپ کے سوتیلے بھائی ابو بکر عمر اور عثمان انہی سے پیدا ہو ئے ۔(12)آپ کو والد نے تیسری شادی منفلوط کی ایک مالدار خاتون مسماۃ حمید علی ابو النصرسے  کی۔ ان سے کو ئی اولاد نہ ہوئی ۔منفلوطی کے بھا ئیوں میں حسن (سگے بھا ئی ) منفلوط کے معروف سردار تھے جبکہ سوتیلے بھا ئی ابو بکر جرید ۃ الاتحادکے چیف ایڈیٹر رہے ۔عمر اوائل شباب میں فوت ہو ئے اور عثان پیشہ معلمی سے منسک رہے(13)
  • نومبر
1984
محمد افضل ربانی
بندہ اتحادِ اسلامی مجاہدین افغانستان کی اصلاحی کمیٹی کا ممبر ہے۔ دولتِ انقلابی اسلامی افغانستان کے بارے میں چند استفسارات پیشِ خدمت ہیں۔ آپ ازراہ نوازش ان کے جوابات عنایت فرمائیں۔ شکریہ

سوال نمبر 1: