• اپریل
1985
شبیر احمد نورانی
کتا ب و سنت کی روشنی میں          احکام عقیقہ:
8۔ہر مسلمان کو حتیٰ الوسع اپنی اولاد(مذکریا  مؤنث)کا  عقیقہ کرنا چایئے ۔کیونکہ حضرت سلمان بن عامر رضی اللہ عنہ )روایت کرتے ہیں :کہ" میں نے رسول اللہ ﷺ کو سنا ۔آپﷺ فرماتے تھے لڑکے کا عقیقہ ہے اس کی طرف سے خون بہاؤ اور اس سے تکلیف کو دور کر دو!"
9۔عقیقہ کرنا واجب یا فرض نہیں بلکہ سنت ہے کیو نکہ آپﷺ نے خود حضرت حسن  و حضرت حسین   کا عقیقہ  کی چنانچہ حضرت برید  ﷜ روایت کرتے ہیں :کہ"رسول اللہ ﷺ نے حضرات حسن وحسین  ﷢ کا عقیقہ کیا !"
اسی طرح آپﷺ نے دوسروں کو عقیقے کا حکم دیا ۔ چنانچہ حضرت عائشہ ؓ  سے روایت ہے "کہ"رسول اللہ ﷺ نے انہیں حکم دیا کہ لڑکے کی طرف سے دو ایک جیسی بکریاں اور لڑکی کی طرف سے ایک بکری ذبح کر کے عقیقہ کریں ۔اور دوسروں کو رغبت دلانے کے ساتھ آپ ﷺ نے ایسا کرنے یا نہ کرنے کا اختیار بھی دیا ۔لہٰذا عقیقہ کو فرض یا واجب کہنا دلا ئل کی روشنی میں ثابت نہیں ہو تا جیسا کہ مندرجہ احادیث سے ثابت ہے رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فر ما یا :
کہ" جس کے ہاں بچہ پیدا ہو پس وہ اپنے بچے کا عقیقہ کرنا چا ہے تو کرے۔"
  • مارچ
1985
شبیر احمد نورانی
اولاد کی پرورش کرنا:
1۔نیک اولاد انسان کے لئے دنیا میں سکون وامن کا باعث ہے۔لہذا اللہ تعالیٰ سے انتہائی عجز وانکسار کے ساتھ نیک اولاد کی دعا کرنی چاہیے!
ارشاد ربانی ہے:
﴿فَالْآنَ بَاشِرُوهُنَّ وَابْتَغُوا مَا كَتَبَ اللَّـهُ لَكُمْ﴾
"اب تم اپنی بیویوں سے شب باشی کیا کرو،اور اللہ تعالیٰ نے جو  تمہارے لکھ دیا ہے اسے تلاش کرو"
حضرت ابن عباس  رضی اللہ تعالیٰ عنہ   بیان فرماتے ہیں کہ:"(ما كتب الله ) سے مراد اولاد ہے"[1]اسی لئے  رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے زیادہ اولاد کی  صلاحیت والی عورتوں سےنکاح کا حکم دیا ہے
  • اپریل
  • مئی
1984
شبیر احمد نورانی
اللہ تعالیٰ نےانسان کو انتہائی قیمتی نعمتوں سے نوازا ہے۔ان میں سے ایک نعمت زبان ہے۔جس کا صحیح استعمال انتہائی خوشگوار نتائج پیدا کرتا ہے۔لیکن اگر اسے غلط استعمال کیا جائے تو ہر قسم کے فساد اور خرابی کی جڑ بن جاتی ہے۔لہذا اللہ تعالیٰ نے اور اس کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے زبان کی حفاظت پر بہت زور دیا ہے۔

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہےکہ:
  • جون
1984
شبیر احمد نورانی
حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے کہ:

"صدقہ سے مال کم نہیں ہوتا،بندہ اگر معاف کرے تو اللہ تعالیٰ اسے مقام عزت عطا فرماتا ہے اور جس نے اللہ تعالیٰ کی رضا مندی کے لئے انکساری کی،اللہ تعالیٰ اس کا مقام بلند فرماتا ہے"اس معنی کی حدیث متعدد کتب میں موجود ہے۔
  • فروری
1986
شبیر احمد نورانی
1. اسماعیل نے زید کی والدہ کا دودھ پیا ہے۔ اب وہ زید کی لڑکی سے نکاح کرنا چاہتا ہے۔ کیا یہ نکاح جائز ہے یا نہیں؟2. ایک لڑکی کا والد اس کا نکاح کم سنی میں کسی شخص سے کردیتا ہے۔ بلوغت کے بعد لڑکی کو نکاح قابل قبول نہیں، لہٰذا وہ صراحتاً انکاری ہوجاتی ہے۔اس کے بعد اس لڑکی کا والد ہی اس کا نکاح کسی دوسری جگہ کردیتا ہے۔ پہلے اور دوسرے نکاح کا کیا حکم ہے؟
  • ستمبر
1983
ناصر الدین البانی
استاذ ناصر الدین البانی علمی دُنیا میں کسی تعارف کے محتاج نہیں ان کا اسلوب تحریر او رطرز استدلال صرف کتاب اللہ اور سنت ِ رسول اللہ ﷺ پر مبنی ہے او ریہی مسلک اہل حدیث کا طرہ امتیاز ہے۔زیر نظر مقالہ اس کا منہ بولتا ثبوت ہے۔اللہ تعالیٰ مجھے اور آپ کو ہدایت اور ثابت قدمی عطا فرمائے۔ آمین!واجبات مریض :مندرجہ ذیل ہدایت پر عمل کرنا ہرمریض کے لیے انتہائی ضروری ہے:1۔ اللہ تعالیٰ کے فیصلے پر راضی رہے